خبریں

ہندوستانی فضائیہ ہر صورتحال کا مقابلہ کرنے کے لئے تیار/ ایئر چیف مارشل

فضائیہ کے سربراہ آر کے ایس بھدوریا نے کہا ہے کہ ہندوستانی فضائیہ نے اپنے عزم مصمم اور ضرب کاری لگانے کا مظاہرہ کیا ہے اور ضرورت پڑنے پر وہ اپنے دشمنوں سے مؤثرطور پر نمٹے گی۔ شمالی سرحد پر حالیہ تعطل کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے فوری طور پر جوابی کارروائی کے لئے فضائیہ کے جانبازوں کی ستائش کی۔ وہ فضائیہ کے دن کے موقع پر جمعرات کو ایک تقریب سے خطاب کررہے تھے۔ ایئرچیف مارشل بھدوریا نے ایئر فورس کے88 ویں یوم تاسیس کے موقع پر فضائیہ کے جوانوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ انہیں موجودہ اور مستقبل کے چیلنجوں کو ذہن میں رکھتے ہوئے خود کو ایک ایسی قوت میں تبدیل کرنا ہوگا جو ہر طرح کے چیلنجوں سے مقابلہ کر سکے۔ان کا کہناتھا کہ آج ملک کو یقین دلایا کہ ایئر فورس دن رات ملک کی فضائی سرحدوں کا دفاع کرنے اور کسی بھی صورتحال سے مضبوطی سے نمٹنے کے لئے تیار ہے۔انہوں نے کہا کہ خطے میں پڑوسی ممالک کی بڑھتی ہوئی خواہشات سے پیدا ہونے والے خطرے اور چیلنج سے نمٹنے کے لئے ایئرفورس پوری طرح تیار ہے اور گزشتہ دنوں ضرورت پڑنے پر فورس نے فوری ضروری کارروائی کرکے اپنی صلاحیت و کارکردگی کا ثبوت دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ ملک کو یقین دلانا چاہتے ہیں کہ فضائیہ ہر صورتحال اور چیلنج کا مقابلہ کرنے کے لئے پوری طرح تیار ہے۔فضائیہ کے سربراہ نے کہا کہ یہ وقت کی ضرورت ہے کہ ایئر فورس ہر طرح سے مضبوط ہو اور چیلینجز کی آزمائش کا مقابلہ کرے نیز یہ خود کفیل ہندوستان کے لئے بھی ضروری ہے۔ ان کے خطاب کے بعد ایئر فورس کے مختلف طیاروں نے کرتب بازی اور اپنی طاقت کے جوہر کا مظاہرہ کیا۔ اس موقع پر چیف آف ڈیفنس اسٹاف جنرل بپن راوت اور چیف آف آرمی اسٹاف اور چیف آف نیول اسٹاف بھی موجود تھے۔ جمعرات کو فضائیہ کے قیام کو 88 سال پورے ہوئے۔ 8اکتوبر1932 کو ہندوستانی فضائیہ قائم کی گئی تھی۔غازی آباد میں ہنڈن میں فضائیہ کے اسٹیشن پر ایوارڈ تقسیم کئے جانے کی تقریب منعقد ہوئی اور مختلف ہوائی جہازوں نے اپنے کرتب دکھائے۔ مشہور آکاش گنگا ٹیم کے جوانوں نے بھی اپنی مہارت اور شجاعت کا مظاہرہ کیا۔اس موقع پر صدر جمہوریہ، نائب صدر جمہوریہ، وزیر اعظم اوروزیر دفاع نے فضائیہ کو مبارکباد دی ہے۔صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند نے اپنے ٹوئٹ میں کہا ہے کہ \ہمارے آسمانوں کو محفوظ رکھنے اور آفات کے موقع پر انسانی بنیاد پر سول حکام کی مددکرنے کے لئے ملک فضائیہ کا شکر گزار ہے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ رافیل، اپاچی اورچنوک کی شمولیت سے جو جدید کاری کا عمل شروع ہوا ہے، اس سے ہندوستانی فضائیہ اور زیادہ ناقابل تسخیر بن جائے گی۔نائب صدر جمہوریہ ایم وینکیا نائیڈو نے کہا کہ ہندوستانی فضائیہ کے جانبازوں کو جرات وہمت اور پیشہ وارانہ مہارت کے طور پر جانا جاتا ہے اورانہوں نے جنگ اور امن کے زمانے میں ملک کا سر فخر سے اونچا کیا ہے۔اس موقع پر فضائیہ کے جوانوں کو مبارکباد دیتے ہوئے وزیراعظم نریندر مودی نے کہا کہ اِن بہادر جوانوں نے نہ صرف ملک کے آسمانوں کو محفوظ رکھاہے، بلکہ آفت کے وقت انسانی بنیاد پر خدمت کرنے میں بھی ایک اہم کردار ادا کیا ہے۔وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ نے فضائیہ کے بہادر جوانوں اوران کے کنبوں کے لئے نیک خواہشات کا اظہار کیا ہے۔ راج ناتھ سنگھ نے کہا کہ اپنی88 سال سے چلے آرہے قربانی، انتھک محنت کوششوں اور شاندار کارکردگی کے سفر کے نتیجے میں آج ہندوستانی فضائیہ ایک ناقابل تسخیر قوت بن چکی ہے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ سرکارنے جدید کاری اور اندرون ملک ہتھیاروں کی تیاری وغیرہ کے توسط سے ہندوستانی فضائیہ کی صلاحیت بڑھانے کا تہیہ کررکھا ہے۔