سرورق مضمون کالم کی خبریں

اوردیوالی منانے وزیراعظم اچانک گریز سیکٹرپہنچ گئے/ کیا ریاستی سرکار ان کی آمد سے بے خبر تھی؟

21 Oct 2017 کو شائع کیا گیا

ڈیسک رپورٹ
وزیراعظم نریندر مودی جمعرات کو اچانک کشمیر پہنچ گئے ۔ یہاں انہوں نے گریز سیکٹر میں تعینات فوجی اہلکاروں کے ساتھ دیوالی منائی ۔ انہوں نے پورا دن گریز میں فوج اور بی ایس ایف اہلکاروں کے ساتھ گھل مل کر گزارا ۔ اس موقعے پر انہوں نے اہلکاروں میں مٹھائیاں بانٹ دیں اور ان کے ساتھ گپ شپ کیا ۔ وزیراعظم بانڈی پورہ پہنچ گئے جہاں سے انہیں فوجی ہیلی کاپٹر میں سیدھے مزیدپڑھیں

کشمیر : افراتفری عروج پر / فدائی حملے ، ہلاکتیں اورپراسرار بال کٹائی

09 Oct 2017 کو شائع کیا گیا

یسک رپورٹ
پلوامہ پولیس لائن کے بعد ائرپورٹ کے قریب بی ایس ایف کیمپ پر عسکریت پسندوں نے فدائین حملہ کیا ۔ تینوں فدائین مارے گئے۔اطلاعات کے مطابق ایک حملہ آور شروع میں ہی مارا گیا جبکہ اس کے دو ساتھیوں نے مورچہ سنبھال کر کئی گھنٹوں تک فائرنگ کی ۔ فائرنگ میں ایک درجن کے قریب بی ایس ایف اہلکار زخمی ہوگئے ۔اس وجہ سے مزیدپڑھیں

کشمیر : چوٹی کاٹنے کے واقعات میں اضافہ

30 Sep 2017 کو شائع کیا گیا

ڈیسک رپورٹ
جمعہ کو اننت ناگ میںاس وقت لوگ مشتعل ہوگئے جب یہاں کاڈی پورہ میں ایک لڑکی کے بال کاٹنے کا واقعہ پیش آیا ۔ اس نوعیت کے واقعات پچھلے دو ہفتوں سے پیش آرہے ہیں ۔ پہلے کولگام میں لڑکیوں کی چوٹی کے بال کاٹنے کی کئی واراداتیں سامنے آئیں ۔ بعد میں بانڈی پورہ میں ایسا ہی ایک واقعہ پیش آیا ۔ سرینگر کے مضافات میں دن دہاڑے ایک دوشیزہ کی مزیدپڑھیں

ترال میں قیامت صغریٰ / 3 جان بحق درجنوںزخمی، کابینہ وزیر بھی بال بال بچ گئے

23 Sep 2017 کو شائع کیا گیا

ڈیسک رپورٹ
جنوبی کشمیر کے ترال علاقے میں اس وقت قیامت کا منظر دیکھا گیا جب یہاں ایک گرینیڈ حملے میں تین عام شہری مارے گئے جبکہ کئی پولیس اہلکاروں سمیت درجنوں افراد زخمی ہوگئے ۔مارے گئے افراد میں اسلامک یونیورسٹی میں زیرتعلیم سکھ فرقے سے تعلق رکھنے والی پنکی کور اور64 سالہ شہری مزیدپڑھیں

راجناتھ سنگھ کے بعد منموہن سنگھ کشمیر مشن پر

16 Sep 2017 کو شائع کیا گیا

مرکزی وزیرداخلہ راجناتھ سنگھ نے ریاست کا اپنا چار روزہ دورہ مکمل کیا ہے ۔ ان کے دورے سے کیا تبدیلی آئے گی اس کا اندازہ لگانا مشکل ہے ۔ بی جے پی کو شکایت ہے کہ انفارمیشن ڈپارٹمنٹ نے ان کے دورے کو زیادہ کوریج نہیں دیا ۔ محکمے کو اس حوالے سے حکومت کی طرف ہدایات ملی تھیں یا ان سے کوتاہی ہوئی تا حال معلوم نہیں ہوسکا۔خود وزیرداخلہ نے مزیدپڑھیں

روہنگیا مسلمانوں پر جبر وتشدد/ پوری دنیا تماشائی ،امت مسلمہ بھی خاموش

09 Sep 2017 کو شائع کیا گیا

ڈیسک رپورٹ
میانمار میں آباد مسلمانوں پر ظلم و جبر کے پہاڑ توڑے جارہے ہیں ۔ بودھ اکثریت کے ہاتھوں ان کی مار دھاڑ جاری ہے ۔ صرف تین دنوں کے اندر تین ہزار سے زیادہ مسلمان مارے گئے ۔ ایک لاکھ تیس ہزار اپنا وطن چھوڑ کر بھاگنے پر مجبور کئے گئے۔ سوشل میڈیا پر سامنے آئے مناظر رونگٹھے کھڑا کردینے والے ہیں ۔ ستم یہ ہے کہ پوری دنیا ان مناظر کو دیکھ کر مزیدپڑھیں

اورہندوارہ ابل پڑا/ فرضی انکائونٹر میں طالب علم کی ہلاکت پر احتجاج

26 Aug 2017 کو شائع کیا گیا

ڈیسک رپورٹ
شمالی کشمیر کے ہندوارہ علاقے میں اس وقت لوگوں نے سخت احتجاج کیا جب ایک طالب علم کی فرضی انکائونٹر میں ہلاکت کی خبر پھیلی ۔ یہاں مبینہ طور ایک طالب علم اس وقت مارا گیا جب فوج نے علاقے میں دودن تک جاری رہنے والی جھڑپ میں ایک غیر ملکی جنگجو کے ہلاک کرنے کا دعویٰ کیا ۔ انکائونٹر ختم ہونے کے بعد نزدیکی پولیس اسٹیشن کے حوالے مذکورہ نوجوان کی لاش کی گئی ۔ پولیس نے لاش ہسپتال پوسٹ ماٹم کے لئے لی مزیدپڑھیں

امن گالی اور گولی سے قائم نہیں ہوسکتا (وزیراعظم)/ خصوصی پوزیشن پر مرکز واضح پالیسی اختیار کرے( یشونت سنہا)

19 Aug 2017 کو شائع کیا گیا

ڈیسک رپورٹ
وزیراعظم نریندر مودی نے اعلان کیا ہے کہ کشمیر میںامن گالی اور گولی سے قائم نہیں ہوسکتا ہے ۔ ان کا اشارہ ہے کہ مسئلہ کو حل کرنے کے لئے باہمی اعتماد قائم کرنا ضروری ہے۔ مودی نے اس سے پہلے بھی کہاہے کہ کوئی بھی مسئلہ مذاکرات سے ہی حل ہوسکتا ہے ۔ انہوں نے ایک بار پھر یہ بات مزیدپڑھیں

ترال : القاعدہ کے تین جنگجو مارے کئے گئے ( پولیس)/ حزب کی طرف واپسی کی تیاری میں تھے (حزب ترجمان)

14 Aug 2017 کو شائع کیا گیا

دھوار یعنی رواں ماہ کی9 تاریخ کو ترال کے گلاب باغ گائوں میں تین جنگجو مارے گئے ۔ پولیس نے مارے گئے جنگجووں کو اس گروپ کا حصہ قراردیا جس کی قیادت حزب کا باغی کمانڈر ذاکر موسیٰ کرتا ہے ۔ اس گروپ کا تعلق القاعدہ اور مزیدپڑھیں

سلسلہ وار ہلاکتیں اور جی ایس ٹی/ حکومت سخت مشکلات سے دوچار

19 Jun 2017 کو شائع کیا گیا

ڈیسک رپورٹ
سترہ رمضان کو یوم بدر کے موقعے پر جنگجووں نے اپنی موجودگی کا بھر پور مظاہرہ کیا۔ کئی سالوں کے بعد جنگجووں کے ہاتھوں اس طرح کی منظم کاروائی دیکھنے کو ملی ۔ ایک ہی دن میں نو جگہوں پر دھماکے کئے گئے جن سے کئی فورسز اہلکار زخمی ہوگئے ۔ اس کے علاوہ جنگجووں نے ایک سیکورٹی پکٹ پر حملہ کیا اور چار سپاہیوں سے ان کی بندوقیں مزیدپڑھیں