نقطہ نظر کالم کی خبریں

انتخابات2019ء کیا راہول گاندھی متبادل قیادت بن سکیں گے؟

19 Jan 2019 کو شائع کیا گیا

سلمان عابد

اس سال مئی میں ہونے والے عام انتخابات بھارت سمیت پاکستان میں بھی خاصی اہمیت کے حامل ہیں، کیونکہ اس سے بھارت کی داخلی اور خارجی سیاست میں کچھ تبدیلی آسکتی ہے۔ اس لیے خطے کی سیاست میں دلچسپی رکھنے والے مبصرین بڑے بڑے سیاسی پنڈتوں کی نظریں بھارت کے عام انتخابات پر ہیں، اور جس انداز سے ایک ماہ قبل کئی ریاستی انتخابات کے نتائج سے انتخابات کی اہمیت اور بڑھ گئی ہے۔ مجھے اچھی طرح یاد ہے کہ جب بھارت مزیدپڑھیں

بیتے سال کی یادتیں

05 Jan 2019 کو شائع کیا گیا

تلخ اور شرین یادوں کے ساتھ سال2018 ہم سے رخصت ہو ہی گیا اور نئے سال کا سورج بھی طلوع ہوگا۔ گردش لیل ونہار سے یا ستاروں اور سیّاروں کے اپنے اپنے محور کے گرد چکر لگانے سے ماہ وسال کے بدلنے سے یا کسی گزرنے اور نئے سال کے آنے سے کوئی خاص فرق نہیں پڑتاہے۔ فرق اس سے پڑتا ہے کہ گزرنے والا سال ہمیں کیا دے کر جارہا ہے اور نیا سال ہمارے لئے کیا لا رہا۔ اگر گذرنے والے سال پر ایک طائرانہ نگاہ ڈالی جائے تو احساس ہوگا کہ یہ سال بھی خوشیاں کم،مگر غموں کی بھرمار دے کرگذر گیا ۔اس سال مزیدپڑھیں

مذاکرات کیلئے عمران خان کی پیشکش

22 Sep 2018 کو شائع کیا گیا

پاکستانی وزیرِاعظم عمران خان نے اپنے بھارتی ہم منصب نریندر مودی کو خط لکھ کر دونوں ممالک کے درمیان مذاکرات کا باقاعدہ طور پر دوبارہ آغاز کرنے پر زور دیا۔پاکستان میں حکومت بنانے کے بعد سے عمران خان کی جانب سے اپنے بھارتی ہم منصب کو دو طرفہ مذاکرات کی یہ پہلی رسمی تجویز ہے ۔اس دوران ایک اہم پیش رفت کے بطورہندوپاک وزرائے خارجہ کے درمیان نیویارک میں ملاقات طے ہوگئی تھی تاہم یہ ملاقات اُس وقت منسوخ کرنے کا اعلان کیا گیا جب مزیدپڑھیں

مسئلہ کشمیر حل کیلئے اقوام متحدہ میں ثالثی کی ایک بار پھر تجویز

02 Sep 2018 کو شائع کیا گیا

گذشتہ دنوںاقوام متحدہ کی سیکورٹی کونسل میں کشمیر مسئلے پر ہندوپاک مندوبین ایک بار پھر لڑ پڑے،اقوام متحدہ میں کستان کی مستقبل مندوب ملیحہ لودھی نے کشمیر پر ثالثی کرنے کی اقوام متحدہ کو تجویز پیش کر دی جس پر بھارتی مندوب آگ بھگولا ہوگیا اور اکبرالدین نے پاکستان کی نئی حکومت کو مشورہ دیا کہ وہ کشمیر مسئلے پر سیاست کاری کے بجائے ساوتھ ایشیا کو تشدد اور دہشت گردی سے پاک بنانے میں اپنا تعاون پیش کرے ۔ اس طرح سے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں مزیدپڑھیں

شمال مشرقی ریاستوں میں بی جے پی کی جیت

19 Aug 2018 کو شائع کیا گیا

کلدیپ نائیر
بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) سات شمال مشرقی ریاستوں میں سے چھ میں بڑی آسانی کے ساتھ جیت گئی ہے، جس کا تصور بھی نہیں کیا جا رہا تھا۔ جب تقسیم ہند کے سوال پر غور کیا جا رہا تھا تو بی جے پی کی انتخابی جیت کا خیال بھی نہیں تھا۔ اس زمانے میں فخر الدین علی احمد کانگریس کے چوٹی کے لیڈر تھے، انھوں نے اعتراف کیا تھا کہ مختلف پڑوسی ریاستوں میں سے جن میں مشرقی پاکستان بھی تھا جو اب بنگلہ دیش ہے وہاں سے مزیدپڑھیں

سیکولر ازم کے لیے خطرات

21 Jul 2018 کو شائع کیا گیا

کلدیپ نائر
مجھے یاد آتا ہے کہ آزادی کے بعد سیاستدان اور سفارتکار سید شہاب الدین نے مسلمانوں کے نکتہ نظر کی وضاحت کی تھی۔ انھوں نے کہا کہ علیحدگی کا مطالبہ نہ کرو بلکہ تجویز پیش کی کہ ملک کے اندر ہی مسلمانوں کے لیے ’’سیلف رول‘‘ کا مطالبہ کیا جانا چاہیے۔ لیکن کسی نے ان کی بات کو سنجیدگی سے نہ لیا حتیٰ کہ مسلمانوں نے بھی کیونکہ تقسیم نے دونوں برادریوں کو اذیت میں مبتلا کیا تھا۔ اب آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے صدر اسد اللہ اویسی نے مطالبہ کیا ہے کہ مسلح افواج میں مزیدپڑھیں

سیاسی کشیدگی

14 Jul 2018 کو شائع کیا گیا

کلدیپ نائر
پاکستان کی احتساب عدالت نے دو مرتبہ عوامی ووٹوں سے منتخب ہونے والے وزیراعظم محمد نواز شریف کو 10سال کے لیے قید کی سزا سنا دی ہے۔ اس عدالتی فیصلے کے بارے میں عام طور پر کہا جا رہا ہے کہ یہ بہت سخت فیصلہ ہے۔ نواز شریف کو اس فیصلے کی اطلاع لندن میں ملی جہاں انھوں نے اعلان کیا کہ وہ پاکستان واپس جائیں گے۔ البتہ حکمرانوں کے قریبی ذرایع کے مطابق جونہی وہ پاکستان میں اتریں مزیدپڑھیں

بھارت اور امریکا کے تعلقات میں اتار چڑھاؤ

07 Jul 2018 کو شائع کیا گیا

کلدیپ نائر
ایک خودسر حکمران ملک کے جمہوری نظام کو تلپٹ کر سکتا ہے اور یہی کام امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کر رہے ہیں۔ لیکن اس کے ساتھ ہی وہ ایک سامراجی طاقت کی شکل بھی اختیار کر رہے ہیں۔ بھارت کے امریکا کے ساتھ اچھے تعلقات ہیں اور دونوں میں اچھی افہام و تفہیم بھی ہے کیونکہ دونوں ملک جمہوری ہیں۔ ایک دنیا کی مضبوط ترین جمہوریت جب کہ دوسری دنیا کی سب سے بڑی جمہوریت کہلاتی ہے۔
صدر ٹرمپ نے مبینہ طور پر مزیدپڑھیں

نریندر مودی کا خراج تحسین

02 Jul 2018 کو شائع کیا گیا

کلدیپ نائر
یہ میرے لیے بڑے فخر کی بات ہے کہ وزیراعظم نریندر مودی نے میری تنقید کا نوٹس لیا ہے۔ بے شک انھوں نے میری ستائش کی اور کہا میں نامور صحافی کلدیپ نیئر جی کی عزت کرتا ہوں جنہوں نے ایمرجنسی کے دوران انسانی حقوق کی آزادی کے لیے جدوجہد کی۔ ’’میرے لیے وہ بڑی سخت نکتہ چینی کرنے والے ہیں، مگر میں اس کے لیے انھیں سلام پیش کرتا ہوں‘‘ جہاں تک اس وقت کی وزیر اعظم مسز اندرا گاندھی کی ایمرجنسی کا تعلق ہے تو اس حوالے سے وزیراعظم مودی اور مزیدپڑھیں

قوم سے معافی مانگنی بہت ضروری ہے

23 Jun 2018 کو شائع کیا گیا

کلدیپ نائر
قوم کی تاریخ میں بعض تاریخیں اتنی اہم ہوتی ہیں کہ انھیں فراموش نہیں کیا جا سکتا۔ ان میں سے ایک تاریخ 25 جون کی ہے جب اس وقت کی وزیراعظم اندرا گاندھی نے جمہوریت کی شمع بجھا دی۔ الٰہ آباد ہائی کورٹ نے انتخابات میں دھاندلی کے الزامات میں اسے مستعفی ہونے کا حکم دیا تھا مگر اندرا نے یہ عدالتی حکم ماننے کے بجائے الٹا ملک کا آئین ہی معطل کر دیا اور اس کے بعد بدترین قسم کی زیادتیاں کرنا شروع کر دیں۔ مزیدپڑھیں