خبریں

امرناتھ یاترا اختتام پذیر

55 دنو ں تک جاری رہنے والی امرناتھ یاترا بد ھ کو گپھا میں خصوصی پوجاکے ساتھ ہی پرامن طور اختتام پذیر ہوئی اوراس سال مجموعی طور پرقریب3لاکھ54ہزاریاتریوں کی ریکارڈ تعداد نے شیولنگم کے درشن کئے جبکہ اس دوران15یاتریوں کی قدرتی اور حادثاتی موت واقع ہوئی۔ سخت ترین حفاظتی انتظامات کے بیچ28جون کو شروع ہوکر55روز تک جاری رہنے کے بعد امر ناتھ یاترا کے آخری پڑاؤ کے سلسلے میں شراون پورنیما اور رکھشا بندھن کے موقعہ پربد ھ کوچھڑی مبارک امرناتھ گپھا پہنچائی گئی۔ اس موقعہ پر وہاں ایک بھاری تعداد نے انتہائی جوش و خروش سے پوجا میں حصہ لیا۔ اس طرح جنوبی کشمیر کے ہمالیائی پہاڑوں میں بھجن وکیرتن اورخصوصی دعاؤں کے ساتھ ہی شراون پورنیما ،رکھشا بندھن کے موقعہ پرامر ناتھ یاترا اختتام پذیر ہو گئی۔ امر ناتھ شرائن بور ڈ کے کئی افسران گپھا پہنچے اور پوجا میں حصہ لیا۔ اس موقعہ پر ریاست میں امن وآ شتی کیلئے خصوصی دعا کی کی گئی۔ اعدادوشمار کے مطابق اس برس مجموعی طور پر3لاکھ54یاتریوں نے گپھا کے درشن کئے ۔ان میں سے یاتریوں کی ایک بڑی تعداد نے گپھا تک پہنچنے کیلئے ہیلی کاپٹر کے ذریعے سفر کیا۔ اعدادو شمارکے مطابق اس سال گپھا تک کے سفر کے دوران ایک مزدور سمیت15یاتری اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھے اور ان میں سے بیشتر کی قدرتی موت واقع ہوئی۔جموں کشمیر پولیس کے علاوہ امرناتھ یاترا کی حفاظت کیلئے نیم فوجی دستوں کی اضافی کمپنیوں کو بھی تعینات کیا گیا تھا۔ یاترا کی حفاظت کیلئے سیکورٹی فورسز کی تعیناتی کا عمل20جون سے شروع کیا گیا اور اس سے قبل ہی سینٹرل ریزرو پولیس فورس(سی آر پی ایف) کی اضافی کمپنیوں کی ریاست آمد کا سلسلہ شروع ہوا۔ا ضافی اہلکاروں کی بیشتر تعداد کو امر ناتھ گپھا تک بالہ تل اور پہلگام کے راستوں پر تعینات کیا گیا تھا۔