سرورق مضمون

بات سے بات نہ بنی ، فیصلے دہلی میں ہونگے؟

ڈیسک رپورٹ
گزشتہ روز8 جون یعنی جمعرات کو وزیراعلیٰ نے سرینگر میں افطار پارٹی کا اہتمام کیا تھا۔ اس افطار پارٹی میں کئی فوجی کمانڈروں،پولیس آفیسروں ، سیول انتظامیہ کے اہلکاروں اور میڈیا نمائندوں کے علاوہ مرکزی وزیرداخلہ راجناتھ سنگھ نے دہلی سے آکر شرکت کی ۔ افطار پارٹی سے پہلے یوتھ سپورٹس جلسے کا اہتمام کیا گیا تھا ۔ جلسے میں چھ ہزار کے لگ بھگ جوانوں کی شرکت کی اطلاع ہے ۔ ا س موقعے پر ریاست کے کئی نامور کھلاڑیوں کو انعامات سے نوازا گیا ۔ یہ اپنی نوعیت کا ایک اہم جلسہ قرادیا جارہاہے ۔ اس موقعے پر ریاست کی وزیراعلیٰ بھی موجود تھیں جنہوں نے جلسے میں شریک نوجوانوں کی بڑی تعریف کی ۔ وزیرداخلہ نے اس طرح کے میلے کو خوش آئند قرار دیا ۔ جلسے کا اہتمام کرنے والوں کی تعریف کرتے ہوئے وزیرداخلہ نے اسے ایک مثبت قدم قرار دیا اور اقرار کیا کہ کسی ایسے جلسے میں ان کی یہ پہلی شرکت ہے ۔ اس موقعے پر انہوں نے نوجوانوں سے آگے آکر بات چیت میں شامل ہونے کی دعوت دی ۔ وزیرداخلہ نے دہلی واپسی سے پہلے پولیس اور فوج کے کئی اعلیٰ عہدیداروں کے علاوہ ریاستی وزیراعلیٰ اور گورنر سے ملاقات میں کشمیر صورتحال پر تبادلہ خیال کیا ۔ اس کے بعد انہوں نے ایک پریس کانفرنس سے خطاب کیا ۔ تاہم کوئی بڑا اعلان کرنے کے بجائے انہوں نے فیصلہ واپس دہلی جاکر کرنے کی بات کی۔ اس طرح سے وزیرداخلہ کا دوروزہ کشمیر دورہ اختتام کو پہنچا ۔
وزیرداخلہ راجناتھ سنگھ اکثر وبیشتر کشمیر کی صورتحال کا جائزہ لینے یہاں آتے ہیں ۔ ان کا حالیہ دورہ اس وجہ سے بڑا اہم سمجھاجاتا تھا کہ ریاست میں صورتحال انتہائی نازک موڑ تک آگئی ہے ۔ اس موقعے پر مرکزی سرکار نے ایک مہینے کی یک طرفہ جنگ بندی کا اعلان کیا ہے اور بات چیت کا آغاز کرنے کا اشارہ دیا ہے ۔ یہ جنگ بندی اس مرحلے پر کی گئی جب ریاست میں آپریشن آل آوٹ کے تحت جنگجووں کو ختم کرنے کی کوشش بہت آگے بڑھ گئی تھی۔ اس آپریشن کے دوران دوسو سے زیادہ جنگجو مارے گئے ۔ البتہ مزاحمت کرتے ہوئے درجنوں عام شہری بھی جان بحق ہو گئے۔ عام شہریوں کے مارے جانے کی وجہ سے لوگوں میں سخت تشویش پیدا ہوگئی ۔ اس وجہ سے حالات پر قابو پانا سرکار کے لئے ممکن نہ ہوا تو یک طرفہ جنگ بندی کا اعلان کیا گیا ۔ اس اعلان سے سیاسی حلقے حیران ہوکر رہ گئے ۔ بی جے پی سرکار کی کوشش تھی کہ ریاست میں عسکریت کا خاتمہ کیا جائے ۔ لیکن کشمیری نوجوانوں نے اس کا ساتھ نہ دیا اور تین سو کے لگ بھگ نئے نوجوان عسکری صفوں میں شامل ہوگئے ۔ دہلی سرکار سخت تنقید کا نشانہ بنی ۔ اس دوران ملک میں کئی ریاستوں میں انتخابات ہوئے جن میں بی جے پی کو شکست کا سامنا کرنا پڑا۔ کرناٹک میں ایک بڑی پارٹی بن کر ابھرنے کے باوجود اس کی سرکار نہ بنی ۔ کیرالہ اور دوسری کئی ریاستوں میں ضمنی پارلیمانی انتخابات میں کانگریس نے بی جے پی کو شکست سے دوچار کیا ۔ اگلے سال کے پارلیمانی انتخابات سے پہلے بی جے پی نے کشمیر میں حالات کو قابو میں لانے کے لئے کشمیر میں یک طرفہ جنگ بندی کا اعلان کیا۔ جنگجووں نے جنگ بندی میں شامل ہونے سے انکار کیا اور لشکر طیبہ کے علاوہ جیش محمد نے اپنی کاروائیوں میں تیزی لائی ۔ ان تنظیموں نے سرینگر کے علاوہ وادی کے کئی مقامات پر فورسز پر حملے کئے۔ اس وجہ سے کئی سیکورٹی اہلکاروں کی ہلاکت اور زخمی ہونے کے علاوہ عام شہری بھی مارے گئے ۔ ادھر حکومت نے علاحدگی پسندوں کے ساتھ بات چیت کا اعلان کیا ۔ اس اعلان کے ردعمل میں حریت کانفرنس نے ایک اہم اجلاس میں فیصلہ کیا کہ مذاکرات میں شامل ہونے کے لئے ضروری ہے کہ مرکزی سرکار بات چیت کے حوالے سے پائے جانے والے ابہام کو دور کرے ۔ مرکز کی طرف سے اس اعلان کا ابھی تک کوئی جواب نہیں دیا گیا ۔ تاہم مرکزی وزیرداخلہ نے کشمیر آکر صلاح مشورہ کرنے کا اعلان کیا ۔ ان کا دوروزہ دورہ جمعہ کو اختتام کو پہنچا ۔ لیکن سرینگر میں آمد کے موقعہ پر انہوں نے کوئی خاص اعلان کرنے سے انکار کیا۔ خیال تھا کہ وزیرداخلہ جنگ بندی میں توسیع کے علاوہ علاحدگی پسندوں کے ساتھ بات چیت کی پیش کش بھی کریں گے، لیکن ایسا کچھ بھی نہیں ہوا ۔ خیال کیا جاتا ہے کہ واپس جاکر اس حوالے سے وزیراعظم کے ساتھ مشورہ کرنے کے بعد کوئی بڑا اقدام کیا جائے گا ۔ اپنے دورے کے دوران وزیرداخلہ نے اشارہ دیا کہ مرکزی سرکار کچھ بڑے فیصلے لینے والی ہے ۔ انہوں نے کشمیر کی تقدیر بدلنے کا اعلان کیا اور کہا کہ کشمیر مسئلے کو ہمیشہ کے لئے حل کیا جائے گا ۔ اپنے خطاب میں وزیرداخلہ نے جنگجووں سے اپیل کی کہ وہ بندوق چھوڑ کر امن کا راستہ اختیار کریں ۔ وزیراعظم کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے گالی اور گولی کے بجائے گلے لگانے کی بات کی ۔ جنگجووں کے علاوہ حریت لیڈروں سے اپیل کی گئی کہ وہ جنگ کے بجائے امن کے لئے بات چیت کا حصہ بنیں ۔ انہوں نے کہا کہ بات چیت اپنے ہم نوا لوگوں کے ساتھ ہی نہیں مخالفین کے ساتھ بھی ہوسکتی ہے ۔ البتہ ان کا صحیح سوچ کا حامل ہونا ضروری ہے ۔ مذاکرات کار دنیشور شرما کا حوالہ دیتے ہوئے وزیرداخلہ نے کہا کہ شرما کو یہاں سیرسپاٹے کے لئے نہیں بلکہ بات چیت کے لئے ماحول سازگار بنانے کے لئے تعینات کیا گیا ہے ۔ پاکستان کے ساتھ حالات کے حوالے سے بات کرتے ہوئے وزیرداخلہ نے سرحد پار گولہ باری پر اپنی تشویش کا اظہار کیا ۔ انہوں نے پاکستان پر الزام لگایا کہ وہ سرحد پر دراندازی کو ممکن بنانے کے لئے گولہ باری کرتا ہے ۔ کشمیر حکومت کی تعریف کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ حکومت نے لوگوں کی راحت رسانی کے کئی اقدامات کئے ہیں جن سے لوگوں کو ترقی ملنے کا امکان ہے ۔ وزیرداخلہ نے اس بات پر ریاستی سرکار کا شکریہ کیا کہ اس نے مرکزی سرکار کی کئی پالیسیوں کو روبہ عمل لانے میں مدد دی ۔ وزیراعلیٰ نے اس موقعے پر مبینہ طور رمضان سیز فائر سے بہتر نتائج برآمد ہونے کی بات کی ۔ سیز فائر کو آگے بڑھانے کی وکالت کرتے ہوئے وزیراعلیٰ نے اسے ایک عوام دوست قدم قرار دیاہے۔ ان کا کہنا تھا کہ جنگجو مخالف کاروائیوں کو روکنے سے بہتر نتائج بر آمد ہوئے ہیں ۔ وزیرداخلہ کے دور روزہ دورے کے اختتام پر لوگوں کی نظریں دہلی کی طرف لگی ہوئی ہیں تاکہ وہاں سے جلد سے جلد کوئی اعلان کیا جائے ۔