نقطہ نظر

حج کوٹہ میں اضافے کا معاملہ مرکزی حکومت کیساتھ اٹھایا جائے گا/ عمرعبداللہ

حج کوٹہ میں اضافے کا معاملہ مرکزی حکومت کیساتھ اٹھایا جائے گا/ عمرعبداللہ

وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ نے آج نجی ٹور آپریٹر ایسوسی ایشن کو یقین دلایا کہ حج کوٹہ میں اضافے کا معاملہ مرکزی حکومت کے ساتھ اٹھایا جائے گا تا کہ امسال زیادہ سے زیادہ عازمینِ حج کو صفر محمود پر جانے کا موقعہ ملے گا ۔ وزیر اعلیٰ آج العمرہ ٹور اپریٹرز ایسوسی ایشن کے ایک وفد سے عوامی ملاقات کے دوران تبادلہ خیال کر رہے تھے انہوں نے ایسوسی ایشن سے کہا کہ وہ اس معاملے پر مرکزی وزیر خارجہ سلمان خورشید سے تبادلہ خیال کریں گے اور نجی ٹور اپریٹروں کیلئے امسال حج کوٹہ میں اضافے کی ضرورت کو اجاگر کریں گے ۔ عمر نے کہا کہ سڑکیں ترقی کیلئے راہ ہموار کرتی ہیں اور پُل اقتصادی خلیجوں کو پُر کرتے ہیں ۔ وزیر اعلیٰ کوکر ناگ کے بالائی علاقوں سے آئے ایک وفد سے تبادلہ خیال کر رہے تھے انہوں نے کہا کہ سڑک رابطہ شعبے کو اُن کے دورِ اقتدار میں ترجیحات میں شامل کیا گیا ۔ انہوں نے کہا کہ گذشتہ ساڑھے چار برسوں کے دوران اُن کی حکومت نے دور دراز و پسماندہ علاقوں تک رسائی بہتر بنانے اور موجودہ سڑک رابطوں کو توسیع دینے پر خصوصی توجہ دی ۔ زیر اعلیٰ نے کہا کہ دور دراز اور پسماندہ علاقوں میں سینکڑوں نئے پُل اور سڑکیں تعمیر کی جا چکی ہیں اور مزید نئے پلوں اور سڑکوں پر عنقریب کام شروع کیا جائے گا ۔ انہوں نے کہا کہ بہتر سڑک سہولیات کی فراہمی کا مقصد مختلف النوع معاشی سرگرمیوں کو بڑھاوا دینا اور بنیادی ڈھانچے کی ترقی یقینی بنانا ہے ۔ عوامی ملاقات کے دوران مختلف عوامی وفود سے تبادلہ خیال کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ نے کہا کہ اگرچہ وزیر اعظم گرامین سڑک یوجنا کے تحت پسماندہ و دُور دراز علاقوں میں نئی سڑکوں کی تعمیر کر کے انہیں شاہراہوں سے ملانا ہے تا ہم دیگر علاقوں میں سڑک رابطوں کی توسیع کے کام پر بھی معمول کے منصوبے اور ایشیا ڈیولپمنٹ بنک کے تحت توجہ دی جا رہی ہے ۔ عمر عبداللہ نے درجہ فہرست قبایل سے وابستہ ایک وفد سے کہا کہ ٹرائیبل پلان اور پسماندہ علاقوں کی ترقی سے متعلق دیگر سکیموں کے تحت کوکر ناگ کے بالائی علاقوں بشمول پچھو، گڈول وغیرہ میں سڑکوں کی تعمیر کے منصوبے پر غور کیا جائے گا ۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ اُن کی حکومت نے ریاست کی کُلہم ترقی اور ہر خطے تک مدد کا ہاتھ بڑھانا اپنا معیار مقرر کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ سماج کے کمزور طبقوں جیسے گوجر ، بکروال ، درجہ فہرست ذاتوں و قبایل سے وابستہ افراد اور دیگر پسماندہ طبقوں کی فلاح و بہبود پر معقول توجہ دی جا رہی ہے ۔ ایک اور عوامی وفد کی سولر لائیٹس کی فراہمی کی مانگ کے پس منظر میں وزیر اعلیٰ نے کہا کہ حکومت جدید اور قابلِ تجدید توانائی کا دائرہ وسیع کر رہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اس ضمن میں ڈاکٹر فاروق عبداللہ کی قیادت میں مرکزی وزارت برائے جدید و قابلِ تجدید توانائی ریاست میں غیر روائتی توانائی کے ذرایع کو بروئے کار لانے کیلئے ہر ممکن مدد فراہم کر رہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ وزارت ریاست کے پسماندہ علاقوں میں رہنے والوں کو سولر لائیٹس فراہم کر رہی ہے اور غیر روائتی توانائی کے استعمال کا دائرہ اب اہم اداروں بشمول ہسپتالوں اور تعلیمی اداروں تک بڑھایا جا رہا ہے ۔ وزیر اعلیٰ نے نور پورہ ترال کے ایک وفد سے کہا کہ اونتی پورہ میں ڈگری کالج کی مانگ، واٹر سپلائی اور آبپاشی سہولیات میں توسیع کی مانگ پر غور کیا جائے گا ۔ پلوامہ سے آئے ایک وفد نے وزیر اعلیٰ ، جو کہ جموں و کشمیر وقف بورڈ کے چئیر مین بھی ہیں کے ساتھ وقف معاملات پر تبادلہ خیال کیا ۔ ایمپلائیز جوائینٹ ایکشن کمیٹی کا وفد صدر اعجاز احمد خان کی صدارت میں وزیر اعلیٰ سے ملاقی ہوا اور اُن سے ملازمین کے مسایل کے ازالے کیلئے ذاتی طور مداخلت کرنے کی استدعا کی ۔ عمر عبداللہ نے ای جے اے سی وفد کو یقین دلایا کہ اُن کی حکومت ہمیشہ ملازم دوست رہی ہے اور مستقبل میں بھی اُن کی دوست بنی رہے گی ۔ انہوں نے کہا کہ ملازمین کی سبھی جائیز مانگوں پر غور کیا جا رہا ہے اور ملازمین کی زیادہ تر مانگوں کو پورا کیا جا چکا ہے جبکہ باقی ماندہ مانگیں زیر غور ہیں ۔ اس کے علاوہ ریاست کے مختلف علاقوں سے 62 وفود اور سینکڑوں افراد وزیر اعلیٰ سے ملے ۔ وزیر اعلیٰ نے اُنہیں غور سے سُنا اور فوری نوعیت کے عوامی مسایل کے ازالے کیلئے موقعہ پر ہی احکامات صادر کئے اور باقی معاملات کو فوری کاروائی کیلئے متعلقہ حکام کو بھیج دیا ۔ دیگر وفود جو وزیر اعلیٰ سے آج کی عوامی ملاقات میں ملے اُن میں بی بی حلیمہ کالج ، جے کے الیکٹرک نان گزٹیڈ ایمپلائیز یونین ، نوشہرہ انتظامیہ کمیٹی کا وفد بلیوارڈ کے دوکانداروں کا وفد ، پانپور کے ٹرک یونین کا وفد ، این وائی سی کا وفد ، کوائیری ورکرز ایسوسی ایشن کا وفد ، کنٹریکٹرز، رعنہ واری کے دوکانداروں کے وفود ، بسنت باغ کے لل دید سکول کا وفد ، بٹہ مالو ٹریڈ ایسوسی ایشن کا وفد ، جے کے فارسٹ گریجویٹ ایسوسی ایشن ، ایکس سروس مین یونین کشمیر کا وفد ، امور صارفین کے فئیر پرائیز ڈیلرز کا وفد ، جے کے انڈسٹریز ایمپلائیز ایسوسی ایشن کا وفد ، ضلع اننت ناگ کے ہیلتھ سروسز سے وابستہ ، صفائی کرمچاریوں کا وفد ، لل دید ہسپتال کے میڈیکیٹس کا وفد ، سڈکو ، انڈسٹریل اسٹیٹس کے وفد شامل ہیں ۔