خبریں

لیفٹیننٹ گورنر کا 18 سے45 سال کے عمر کے تمام لوگوں کیلئے مفت کووِڈ۔19 ویکسی نیشن دینے کا اعلان
یوٹی میں کووِڈ۔19 ویکسینوں کی دستیابی کو یقینی بنانے کیلئے ویکسین لاجسٹک ٹیم تشکیل دی جائے گی

لیفٹیننٹ گورنر کا 18 سے45 سال کے عمر کے تمام لوگوں کیلئے مفت کووِڈ۔19 ویکسی نیشن دینے کا اعلان<br>یوٹی میں کووِڈ۔19 ویکسینوں کی دستیابی کو یقینی بنانے کیلئے ویکسین لاجسٹک ٹیم تشکیل دی جائے گی

لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے اعلان کیا ہے کہ یوٹی حکومت مرحلہ سوم ویکسی نیشن مہم کے دوران 18 سے 45 سال کی عمر کے تمام افراد کے لئے مفت کووِڈ۔ 19 ویکسی نیشن فراہم کرے گی۔ یہ فیصلہ راج بھون میں لیفٹیننٹ گورنر کی زیر صدارت ایک اعلی سطحی میٹنگ کے دوران لیا گیا جس میں چیف سیکرٹری بی وی آر سبھرامنیم ، فائنانشل کمشنر خزانہ ارون کمار مہتا،فائنانشل کمشنر صحت و طبی تعلیم اَتل ڈولو،لیفٹیننٹ گورنر کے پرنسپل سیکرٹری نتیشور کمار، سیکرٹری ڈی ایم آر آر اینڈ آر سمرن دیپ سنگھ موجود تھے۔لیفٹیننٹ گورنر نے کہا’جموں و کشمیر میں ہم 18 سال سے زیادہ عمر کے لوگوں کو کورونا وائرس کی ویکسین مفت فراہم کرنے کے لئے پُرعزم ہیں۔ حکومت ویکسین کے حصول کے تمام اخراجات برداشت کرے گی۔لیفٹیننٹ گورنر نے وزیر اعظم نریندر مودی کا ’’آزاد کاری‘‘ ویکسین پالیسی کا اعلان کرنے پر ان کا شکریہ ادا کیا ، جس سے 18 سال سے زیادہ عمر کے تمام بالغ یکم مئی سے ٹیکے لگانے کے اہل ہوں گے۔ اس اعلان کے مطابق جموں و کشمیر حکومت ویکسی نیشن مہم کے اگلے مرحلے کا آغاز جلد ہی کرے گی جہاں 18سے45 سال کی عمر والے افراد کو ویکسین فراہم کی جائے گی۔ خصوصاً ویکسی نیشن کی جاری مہم میں 45 سال سے زیادہ عمر کے تمام شہریوں کو ٹیکے لگائے جارہے ہیں۔میٹنگ کے دوران لیفٹیننٹ گورنر نے متعلقہ افسران پر آنے والی ویکسی نیشن مہم کے لئے ایک جامع منصوبہ تیار کرنے پر زور دیا۔ یو ٹی میں کوویڈ 19 ویکسینوں کی پریشانی اور خریداری کو یقینی بنانے کیلئے ویکسین لاجسٹکس ٹیم تشکیل دینے کا بھی فیصلہ لیاگیا۔لیفٹیننٹ گورنر نے ویکسین ، آکسیجن کی فراہمی ، بستر کی دستیابی اور دیگر ہنگامی خدمات کی دستیابی سے متعلق بھی ایک تفصیلی رپورٹ طلب کی ۔ اُنہوں نے اَفسران کو ہدایت دی کہ وہ کووِڈ کی وجہ سے پیدا شدہ صورتحال کے بارے میں حساس رہیںاور اس کے خاتمے اور اس پر قابو پانے کے لئے مناسب اقدامات کریں۔ دریں اثنامعامات میں اضافے کے پیش نظر میٹنگ میں فیصلہ لیا کہ24؍اپریل(سنیچروار) شام 8بجے سے 26؍ اپریل ( سوموار) 6بجے تک یونین ٹریٹری میں مکمل طور پر ’’ کورونا کرفیو‘‘ نافذ ہوگا۔ تمام بازار اور تجارتی ادارے بند رہیں گے۔ تاہم ضروری اور ہنگامی خدمات کی اِجازت ہوگی۔
ادھرجموں کشمیر میں کورونا وائرس کی دوسری لہر کی شدت کے بیچ انتظامیہ نے 24اسپتالوں کو کوویڈ کیلئے مختص رکھا ۔ ادھر جموںکشمیر سرکار کا کہنا ہے کہ 1705بیڈوں کو اسپتالوںمیں کورونا مریضوں کیلئے دستیاب رکھا گیا ہے ۔کورونا وائر س کے کیسوں میں آئے روز اضافہ کے بیچ جموں کشمیر سرکار نے 23اسپتالوں کو کوویڈ کیلئے مختص رکھا ہے جن میں سے 15کشمیر جبکہ 8جموں میں ہے ۔ اس ضمن میں سرکار کی جانب سے جاری کردہ حکمنامہ کے مطابق کوویڈ کیسوں میں اضافہ کے پیش نظر 24اسپتالوں جن میں مریضوں کیلئے بہترین سہولیات دستیاب ہے کو کورونا وائرس کے مریضوں کیلئے مختص رکھا گیا ہے ۔ اس ضمن میں ڈپٹی ڈائریکٹر (پلاننگ ) محکمہ ہیلتھ و میڈیکل ایجوکیشن کی جانب سے جاری کردہ حکمنامہ کے مطابق 24جمو ں کشمیر کے اسپتالوں جن میں مریضوں کیلئے تمام ترسہولیات اور انتظامات موجود ہے کو کوویڈ مریضوں کیلئے رکھا جائے گا ۔ ان اسپتالوں میں جموں صوبے میں گاندھی نگر اسپتال ، سی ڈی اسپتال ، ایم سی ایچ کمپلکس گاندھی نگر ، سی ایچ سی رام گڑھ، اولڈ اسپتال کشتواڑ، ایس ڈی ایچ نگری پرول ، سی ایچ سی چننانی ، اور اے ایچ گگوال سانبہ جبکہ کشمیر صوبے میں سی ڈی اسپتال سرینگر ، این ٹی پی ایچ سی نئی بلڈنگ پریس آباد بڈگام ، ایم سی ایچ کولگام ، این ٹی پی ایچ سی پٹھہ کوٹ بڈگام ، پی ایچ سی چھانہ پورہ بڈگام ، این ٹی ایچ پی سی بانڈی پورہ ، سی ایچ سی داور، طبیہ کالج شیوت بانڈی پورہ، سی ایچ سی حاجن ، آر می اسپتال جیکالائی رنگریٹ ، جی ایل این ایم اسپتال ، کشمیر نرسنگ ہوم ، ایس ڈی ایچ سوپور ، ٹراما اسپتال بجبہاڑہ اور این ٹی پی ایچ سی اکھورہ مٹن شامل ہے ۔ ادھر جموں کشمیر سرکار کے مطابق جموں کشمیر کے اسپتالوں میں 1705بیڈس کو کورونا متاثرہ مریضوں کیلئے رکھا گیا ہے ۔ جن میں سے 1194کشمیر جبکہ 511جموں کے اسپتالوںمیںموجود ہے ۔ ڈپٹی ڈائر یکٹر پلاننگ ہیلتھ اینڈ میڈیکل ایجوکیشن کی جانب سے جاری کردہ ایک نوٹیفکیشن کے مطانق گاندھی نگر اسپتال جموں میں 90بیڈ وں جبکہ سی ڈی اسپتال جموں میں 110بیڈس کو کورونا وائرس مریضوں کیلئے مختص رکھا گیا ہے ، ساتھ ہی ایم سی ایچ کمپلکس گاندھی نگر اسپتال جموں میں98سی ایچ سی رام گڑھ میں 25، اولڈ اسپتال کشواڑ میں70،اور کل ملا کر جموں کشمیر میں 511بیڈس جبکہ اسی طرح سے کشمیرصوبے میں 1194بیڈس کو کورونا متاثرہ مریضوں کیلئے مختص رکھا گیا ہے ۔ جن میں سے 104بیڈس کو سی ڈی اسپتال سرینگر ، 150کو جی ایل این ایم ، 50کو کشمیر نرسنگ ہوم ،50کو ایس ڈی ایچ سوپور ، 110کو ٹراما اسپتال بجبہاڑہ ، 50کو این ٹی پی ایچ سی اکھورہ مٹن ، 60کو ایم سی ایچ کولگام ، 40کو این ٹی پی ایچ سی پٹھ کوٹ بڈگام ، کے علاوہ 100کو این ٹی پی ایچ سی بانڈی پورہ کے علاوہ دیگر اسپتالوں میں بھی بیڈس کو کورونا مریضوں کیلئے مختص رکھا گیا ہے ۔