خبریں

مفتی کی حلف برداری آج/ وزیرا عظم تقریب میں شامل ہونگے

مفتی کی حلف برداری آج/ وزیرا عظم تقریب میں شامل ہونگے

وزیراعظم نریندر مودی کے ساتھ ملاقات کے ساتھ ہی پی ڈی پی سرپرست مفتی محمد سعید کیلئے جموں وکشمیر میں پی ڈی پی اور بی جے پی حکومت کی کمان سنبھالنے کا راستہ ہموار ہوگیا۔دونوں لیڈروں نے اتحاد پر اپنی مہر ثبت کردی۔آج ساڑھے گیارہ بجے جموں یونیورسٹی کے زوراور سنگھ آڈیٹویم میں حلف لیکر دوسری دفعہ ریاست کے وزیراعلیٰ بنیں گے۔تقریب حلف برداری میں وزیراعظم مودی کے علاوہ دونوں جماعتوں کے سینئر لیڈران شرکت کریں گے۔مفتی محمد سعید نے جمعہ کی صبح وزیراعلیٰ مودی کی رہائش گاہ 7ریس کورس پر ایک گھنٹہ طویل میٹنگ کی۔مفتی کے ساتھ پارٹی کے سینئر لیڈر ڈاکٹر حسیب درابو تھے جو اپنی پارٹی کی جانب سے بھاجپا کے ساتھ حکومت سازی کے معاملہ پر مذاکرات میں محو تھے۔ظاہری طور مطمئن مفتی محمد سعید نے ملاقات کے بعد نامہ نگاروں کو بتایا کہ مودی نے حلف برداری کی تقریب میں شرکت کی ان کی دعوت قبول کی اور حلف برداری تقریب صبح  گیارہ بجے منعقد ہوگی۔انہوں نے کہا کہ اس کے بعد اسی روز سہ پہر 3بجے دونوں جماعتوں کے لیڈرا ن کی موجودگی میں کم سے کم مشترکہ پروگرام بھی جاری کیا جائے گا۔قابل ذکر ہے کہ مفتی نے اس اتحاد کو سیاسی اور حکمرانی پر مرکوز قرار دیا۔ان کا کہناتھا’’اس حقیقت سے انکار نہیں کہ اتحاد حکمرانی سے زیادہ سیاسی نوعیت ہے تاہم دونوں چیزوں میں باہم ربط ہے،سیاسی معاملات پر توجہ مرکوز کئے بغیر حکمرانی کا تصور ناممکن ہے‘‘۔انہوں نے حکومت سازی کے معاملہ پر بی جے پی کے ساتھ دو ماہ پر محیط مذاکرات کو اعصابی جنگ قرار دیا۔ان کاکہناتھا’’میری مودی کے ساتھ مفید میٹنگ ہوئی جس میں کئی امور پر تبادلہ خیال ہوا۔پی ڈی پی اور بی جے پی کا ایک ساتھ ملنا شمالی اور جنوبی قطر کا ملاپ ہے‘‘۔انہوں نے مزید کہا’’الیکشن میں عوام کا فتویٰ واضح تھا کہ کشمیر میں پی ڈی پی اور جموں میں بی جے پی لوگوں کی پسند تھی ،اسی لئے ہم نے فیصلہ لیا کہ ہم نے فیصلہ لیا کہ ہم متحد ہوجائیں گے تاکہ ہم ریاست کو ایسی حکومت دے سکیں جو ریاست کے تمام خطوں کو ہمہ جہت ترقی دے سکے گی‘‘۔مودی اور مفتی نے انتہائی خوشگوار ماحول میں ملاقات کی اور گلے مل کر ایک دوسرے کا استقبال کیا۔ مودی مفتی ملاقات خوشگوار ماحول میںہوئی جس میں دونوں لیڈران نے جموں وکشمیر میں حکومت سازی کے معاملہ کا جائزہ لیا۔