اداریہ

وادی کے عوام کیلئے پریشانیاں

وادی کے عوام کیلئے پریشانیاں

وادی میں برفباری ہوتے ہی لوگوں کو کافی مشکلات کاسامناکرناپڑ رہاہے اور برف باری کے ایام میں لوگوں کو طرح طرح کے مشکلات پیش آتے ہیں۔ اشیائے خوردنی کی نامعقول دستیابی ہویا رسوئی گیس کی نایابی، سبزی فروشوں کی مان مانی قیمتوں میں اضافہ یابجلی کی نایابی ہو غرض وادی کے عوام کو بالخصوص ان ایام میں طرح طرح کے مسائل سے جھوجھنا پڑ رہا ہے۔آج کی یہ تازہ برفباری بھی لوگوں کے لئے کئی مشکلات اور مسائل کا سبب بن گئی ہے ۔ اس برفباری سے معمولات زندگی میں کافی خلل پڑ گیا ہے۔ اگرچہ اہم شاہراہوں اور سڑکوں پر برف ہٹایا گیا تاہم کئی اضلاع کی اندرونی سڑکوں کے ساتھ ساتھ وادی کے دو ر دراز علاقوں میں سڑکوں پرمکمل طور برف نہ ہٹائے جانے سے عبور ومرور میں مشکلات پیش آرہی ہیں ۔ وادی کے بیشتر علاقوں میں بجلی سپلائی ٹھپ ہوکر رہ گئی ہے اور دور دراز علاقوں میں لوگ گھپ اندھیرے میں ڈوبے ہوئے ہیں ۔ وادی کے دیہاتی علاقوں میں بجلی سپلائی میں خلل پڑنے کے سبب عوام کو طرح طرح کے مشکلات کا سامنا کرنا پڑا رہا ۔ ادھر سرینگر جموں قومی شاہراہ بند رہنے سے ناجائز منافع خوری اورکالابازاری ایک بار پھر عروج پر پہنچ گئی ہے۔پہلے سے ہی مہنگائی کی مار جھیل رہے لوگوں کو یا تو اشیائے ضروریہ کی مصنوعی قلت کا سامنا کرنا پڑرہاہے یا انہیں یہ چیزیں مہنگے داموں فروخت کی جارہی ہیں ۔ قومی شاہراہ بند رہنے کی صورت میں یہاں عوام کو رسوئی گیس کی قلت کا سامنا کرنا پڑتا۔ حکام کو اس پوری صورتحال کا سنجیدہ نوٹس لیتے ہوئے متعلقہ اداروں کو متحرک کرکے اس بات کو یقینی بنایا جانا چاہئے کہ کالا بازاری اور ناجائز منافع خوری کیلئے تشکیل شدہ چکینگ اسکارڈ اپنا کام نیک نیتی اور سنجیدگی سے انجام دیں ۔ ساتھ ہی لازمی خدمات بشمول بجلی سپلائی کی مکمل بحالی کیلئے ہنگا می اور ٹھوس اقدامات کئے جانے چاہئے تاکہ لوگوں کو برفباری سے پیدا شدہ مشکلات سے نجات مل سکے۔