خبریں

کانگریس تمام مذاہب ، لوگوں ، ذاتوں کا یکساں طور پر احترام کرتی ہے

کانگریس تمام مذاہب ، لوگوں ، ذاتوں کا یکساں طور پر احترام کرتی ہے

بھاجپا میں شمولیت کو خارج از امکان قرار دیتے ہوئے کانگریس کے سینئر لیڈر اور سابق وزیراعلیٰ غلام نبی آزاد نے کہا ہےکہ ”اگر مجھے بی جے میں جانا ہوتا تو میں کب کا چلا گیا ہوتا ۔ اگر چہ راجیہ سبھا میں اپنی مدت پوری کی لیکن سیاست سے کنارہ کش نہیں ہوا ہوں۔ انہوںنے کہاکہ میری خواہش ہے کہ کانگریس پارٹی کو زمینی سطح پر مضبوط کیا جائے ۔ کانگریس اس بات میں یقین رکھتی ہے کہ سبھی مذاہب کے ماننے والوں کا احترام کیا جائے ۔جموں میں تقریب پر تقریر کرتے ہوئے راجیہ سبھا کے سابق لیڈر اور سابق وزیراعلیٰ غلام نبی آزاد نے کہاکہ میری خواہش ہے کہ کانگریس کو زمینی سطح پر مضبوط کیا جائے۔ چونکہ اس وقت پارٹی کو مختلف سطحوں پر چیلنجوں کا سامنا ہے جس سے نمٹنے کی خاطر سبھی کارکنوں اور لیڈران کو زمینی سطح پر کام کرنے کی ضرورت ہے۔ کانگریس پارٹی سبھی مذہب کے ماننے والوں کا احترام کرتی ہیں۔ چاہئے کشمیری ہو یا لداخی یا جموں والے ہم تین خطوں کے لوگوں کا احترام کرتے ہیں۔ راجیہ سبھا سے ریٹائر ہو چکا ہوں لیکن سیاست نہیں ۔ غلام نبی آزاد کا مزید کہنا تھا کہ کانگریس کو مضبوط بنانے کی خاطر کام کرتا رہوں گا۔ کانگریس پارٹی بھائی چارے میں یقین رکھتی ہے لہٰذا یہ ہمارا بنیادی اصول ہونا چاہئے۔ بھاجپا میں شمولیت کو خارج از امکان قرار دیتے ہوئے غلام نبی آزاد نے کہاکہ اگر مجھے بی جے پی میں جانا ہوتا تب میں کب کا چلا گیا ہوتا ۔ انہوںنے کہاکہ بی جے پی کے آنجہانی لیڈر اور سابق وزیر اعظم اٹل بہاری واجپائی کے ساتھ گہرے تعلقات تھے ۔ جب بھی دیوالی یا کوئی دوسرا بڑا دن ہوتا تو میں اٹل بہاری واجپائی کے گھر جا کر اُس کو مبارکباد پیش کرتا ۔ میں نے وزیر اعظم اندرا گاندھی ، ڈاکٹر منہومن سنگھ کے ساتھ کام کیا لیکن اس وقت کانگریس پارٹی کو چیلنجوں کا سامنا ہے اور ہمیں پارٹی کو پھر سے پاؤں پر کھڑا کرنے کی خاطر محنت کرنی ہے۔ غلام نبی آزاد کے مطابق کانگریس اتحاد اور بھائی چارے میں یقین رکھتی ہے اور یہ ہمارا اصولی موقف ہے اس پر سمجھوتہ کرنے کا سوال ہی پیدا نہیںہوتا۔ کانگریس کی اعلیٰ قیادت کے ساتھ اختلافات پیدا ہونے کے بارے میں غلام نبی آزاد نے کہاکہ ایسا کچھ بھی نہیں ہے ۔ انہوںنے کہا کہ نئی پود کو کانگریس کی طرف لانے کی خاطر کارکنوں کو کام کرنا چاہئے۔ غلام نبی آزاد کا کہنا تھا کہ میں کانگریس کا سپاہی تھا اور رہوں گا ۔ یاد رہے راجیہ سبھا میں اپنی مدت پوری کرنے کے بعد قومی میڈیا میں افواہیں گشت کر رہی ہیں کہ غلام نبی آزاد بھاجپا میں شامل ہو سکتے ہیں۔