خبریں

کشمیر اور فلسطین میں ظلم وبربریت یکساں

کشمیر اور فلسطین میں ظلم وبربریت یکساں

حریت (گ) چیئرمین سید علی گیلانی نے کنگن میں اسرائیل کے خلاف نکالے گئے ایک جلوس سے ٹیلی فونک خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اسرائیل نے غزہ میں بمباری کرکے آج تک دو سو سے زیادہ فلسطینیوں کو شہید کرنے جن میں خواتین اور بچوں کی ایک بڑی تعداد شامل ہے ،ظلم و بربریت والی کاروائی کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے لوگوں کے آواز اْٹھانے کی تعریف کی اور کہا کہ ظلم کہیں بھی ہورہا ہو اس کے خلاف آواز اْٹھانا لازم اور فرض بن جاتاہے،گیلانی نے خود اپنے اس متنازعہ خطہء ارض جموں کشمیر کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ یہاں بھی ہم بھارت کے ظلم وجبر کے شکار ہیں۔جیلوں کے دروازے کھلے رکھے گئے ہیں ،خواتین کی عزت وعصمت کی چادروں کو تار تار کیا جاتا ہے،یہاں کی ہند نواز پارٹیوں اور افراد کے علاوہ بھارتی فوج کے ذریعے انسانی حقوق کو پامال کیا جاتا ہے۔گیلانی نے سونہ مرگ کے بال تل والے راستے سے امرناتھ یاترا کے لئے جانے والے یاتریوں کی سہولیت کے واسطے سے وہاں مسلمانوں کی طرف سے لگائے گئے خیموں کو اطلاعات کے مطابق سی۔آر۔پی۔ ایف کے اہلکاروں کے ہاتھوں جلائے جانے کی ظالمانہ کاروائی کی بھی شدید الفاظ میں مذمت کی۔